بدعنوانی کو جڑ سے اکھاڑنا ضرورت ہے، جاوید اقبال

jawediqbalimage

چیئرمین نیب جاوید اقبال کا کہنا تھا کہ بدعنوانی ناسور بن چکی،اسکو جڑ سے اکھاڑنا ضرورت ہے۔

ایک سال کے دوران 440 بدعنوانی کے ریفرنس۔503 افراد گرفتار۔نیب’’احتساب سب کےلیے‘‘کی پالیسی پر گامزن ہے۔

چیئرمین نیب جسٹس(ر)جاوید اقبال کہتے ہیں بدعنوانی دیمک سے بڑھ کر ناسور بن چکی۔میگا کرپشن مقدمات نمٹانا اولین ترجیح ہے۔

 چیئرمین نیب جسٹس(ر)جاوید اقبال نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ بدعنوانی کو جڑ سے اکھاڑ پھینکنا وقت کی ضرورت ہے۔نیب ملک کو بدعنوانی سے پاک کرنے اور منی لانڈرنگ کی روک تھام کےلیے  بھرپور اقدامات کررہا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ بدعنوانی اور منی لانڈرنگ کے ذریعے بیرون ملک بھیجی گئی رقوم واپس لائیں گے۔ان کا کہنا تھا کہ نیب کا کسی گروہ۔سیاست یا سیاسی جماعت سے نہیں۔صرف پاکستان سے تعلق ہے۔احتساب عدالتوں میں 900 ارب کے 1211 ریفرنسز زیر سماعت ہیں۔10 ماہ میں وائٹ کالر مقدمات کو انجام تک پہنچایا جائے گا۔

loading...
loading...