آئ پی پیزکوزائد ادائیگیوں سےمتعلق کیس:عمر ایوب سپریم کورٹ طلب

فائل فوٹو

فائل فوٹو

اسلام آباد:سپریم کورٹ آ ف پاکستا ن آئی پی پیز کو زائد ادائیگیوں سے متعلق کیس میں وزیر بجلی عمر ایوب کو طلب کر لیا۔

بدھ کو چیف جسٹس میاں ثاقب نثار کی سربراہی میں سپریم کورٹ کے 3رکنی بینچ نے آئی پی پیزکوزائد ادائیگیوں سے متعلق کیس کی سماعت کی،آئی پی پیز کے نمائندے سپریم کورٹ میں پیش ہوئے۔

جسٹس اعجاز الاحسن نے کہاکہ رپورٹ کے تحت ہرآئی پی پی کو159ملین زائد ادائیگی کی گئی ۔

سیکریٹری پاورڈویژن نے بتایاکہ فیول اورکپیسٹی کی پے منٹ کرتے رہے ہیں بجلی لیں یا نہ لیں کپیسٹی پے منٹ کرتے رہتے ہیں ۔

چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ چاہے آئی پی پی بجلی بنائیں یہ نہ بنائیں ، عوام کے کروڑوں روپے دے دئیے گئے،دنیا بھرمیں اس طرح کے معاہدے منسوخ کئے جارہے ہیں یہ لوگ ڈارلنگزتھے اربوں کھربوں کا سرکلرڈیٹ بن گیا لوگوں کوبجلی نہیں ملی آئی پی پیزکوپیسے ملتے رہے ۔

سیکریٹری پاور ڈویژن نے کہاکہ این پی سی سی سستے فیول سے چلنے والے پلانٹس کوترجیح دیتی ہے اس کیس پر پریزینٹیشن دیں گے۔

جسٹس ثاقب نثار نے کہاکہ ایک بنی ہوئی پریزینٹیشن وزیراوعظم کو دیتے ہوں گے۔

بعدازاں سپریم کورٹ نے وزیربجلی عمرایوب کو طلب کرتے ہوئے سماعت میں وقفہ کردیا۔

loading...
loading...