غداری کا مقدمہ: سرل المیڈا کا نام ای سی ایل سے نکالنے کا حکم

cyril almeida

لاہور: لاہور ہائی کورٹ میں سابق وزرائے اعظم کے خلاف بغاوت کے مقدمے کی سماعت 22 اکتوبر تک ملتوی کردی گئی ہے، جب کہ عدالت نے سرل المیڈا کا نام ای سی ایل سے نکالنے کا حکم دے دیا۔

تین رکنی لارجر بینچ نے جسٹس مظہر علی نقوی کی سربراہی میں سابق وزرائے اعظم نواز شریف اور خاقان عباسی کے خلاف آرٹیکل چھ کے کیس کی سماعت کی۔

سماعت کے آغاز میں جسٹس مظہر علی اکبر نے کہا کہ کیا آج نواز شریف آئے ہیں، تو زرا اپنا چہرہ ہی دکھا دیں، جس پر نواز شریف سیٹ پر کھڑے ہوگئے۔

اس کے بعد عدالت کی جانب سے پوچھا گیا کہ کیا سرل المیڈا آئے ہیں؟ جس پر ڈان اخبار کے صحافی سرل المیڈا بھی اپنی سیٹ پر کھڑے ہوگئے۔

 جسٹس مظہر علی نقوی نے سرل المیڈا کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ ہم نے آپ کا نام اس لیے ای سی ایل میں ڈالا تھا کہ ہم آپ کی حاضری یقینی بنائیں، اب چونکہ آپ عدالت کے رو برو پیش ہوگئے ہیں، اس لیے آپ کا نام فوری طور پر ای سی ایل سے نکالنے کا حکم دیتے ہیں۔

عدالت کے حکم پر فوری طور پر سرل المیڈا کا نام ای سی ایل سے نکال دیا گیا، جب کہ ان کے خلاف جاری ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری کو بھی ختم کردیا گیا۔

بعد ازاں کیس کی سماعت 22 اکتوبر تک ملتوی کردی گئی۔ پیشی کے بعد نواز شریف واپس رائے ونڈ روانہ ہوگئے۔

loading...
loading...