یکطرفہ امریکی فیصلے کو کالعدم قرار دینے کا مسودہ تیار

UN security council

نیو یارک: اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں مقبوضہ بیت المقدس کی حیثیت پر یکطرفہ امریکی فیصلے کو کالعدم قرار دینے کا مسودہ تیارکرلیا گیا ، جس میں کہا گیا ہے کہ مقبوضہ  بیت المقدس کی حیثیت کے یکطرفہ فیصلے کی کوئی قانونی اہمیت نہیں ہے۔

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے مقبوضہ بیت المقدس کو اسرائیل کا دارالحکومت تسیلم کرنے کے متنازعہ فیصلے کیخلاف مصر کی جانب سے ایک صفحے پر مشتمل قرارداد کا مسودہ تیار کیا گیا ہے۔

جس پر اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں آئندہ ہفتے ووٹنگ متوقع ہے۔ اس مجوزہ قرارداد کے مسودے میں تمام ریاستوں سے کہا گیا ہے کہ وہ مقبوضہ بیت المقدس  میں اپنے سفارت خانے منتقل کرنے سے گریز کریں، اور یکطرفہ امریکی فیصلے کو کالعدم قرار دے۔

سلامتی کونسل میں قرارداد کی منظوری کے لیے کم از کم نو رکن ممالک اور پانچ مستقل ممالک کی حمایت درکار ہوتی ہے جبکہ مستقل ممالک امریکا، چین، فرانس، برطانیہ اور روس میں سے کوئی بھی اسے ویٹو کر کے مسترد کر سکتا ہے۔

loading...
loading...