کراچی میں بچی سے چوکیدار کی بدتمیزی، مشتعل افراد کا اسکول پر دھاوا

فائل فوٹو

فائل فوٹو

کراچی :کراچی کے علاقے ابراہیم حیدری میں 4سالہ بچی  نے والدین کو چوکیدار  کی بدتمیزی سے آگاہ کردیا،مشتعل افراد نے اسکول پر دھاوا بول دیا جبکہ ملزم کو پولیس کے حوالے کردیا گیا۔

کراچی میں 4سالہ  عمارہ  بہادری اور ہمت کا نشان بن گئی،عمارہ  کے ساتھ اسکول کے چوکیدار نے  نازیباں حرکتیں  کرنے کی کوشش کی ،جس پر  بچی  نے گھر جاکر والدین کو اطلاع دے دی ،والدین اسکول پہنچے اور چوکیدار کو دھر لیا۔

خبر جنگل کی آگ کی طرح پھیلی تو عوام کی بڑی تعداد بھی اسکول پہنچ گئی اور توڑ پھوڑ  شروع کردی، اسکول میں توڑ پھوڑ کر کے شیشے اور درازے توڑ ڈالے،ملزم کی  بھی خوب درگت بنائی، جس کے بعد اسے  پولیس کے  حوالے کردیا گیا۔

مشتعل افراد نے تھانے جانے کی کوشش بھی کی، رینجرز نے لوگوں کو تھانے جانے سےروک دیا۔

یوں ننھی عمارہ نے بروقت اطلاع دے کر ملزم کو قانون کے شکنجے میں پہنچا دیا۔

بچی کے والد کا کہنا تھا کہ  عمارہ نے بتایا کہ چوکیدار نے اس کو  جسم پر ہاتھ لگایا ہے،عمارہ کو علاقے کےایک نجی اسپتال منتقل کردیا گیا ہے جہاں اس کا میڈیکل کیا جا رہا ہے ۔

loading...
loading...