پاکستانی نژاد جنوبی افریقی لیگ اسپنر عمران طاہر کو نسل پرستی کا سامنا

فائل فوٹو

فائل فوٹو

جوہانسبرگ:پاکستانی نژاد جنوبی افریقی لیگ اسپنر عمران طاہر کو نسل پرستی کا سامناکرنا پڑا، بھارت کے خلاف چوتھے ایک روزہ  میچ کےدوران   ایک تماشائی نے عمران طاہرکیخلاف  نازیبا الفاظ استعمال کئے۔

مسلمان کہیں بھی ہوں انہیں نسل پرستی کا سامنا کرنا پڑتا ہے ،حالیہ واقعہ جنوبی افریقا  کے لیگ اسپنر عمران طاہر کے ساتھ پیش آیا ۔

جوہانسبرگ میں عمران طاہر بھارت کے خلاف چوتھے ایک روزہ میچ میں  ایک تماشائی نے ان پرنازیبا جملے کسے،  جس پر عمران طاہرغصے میں آگئے۔

اڑتیس سالہ کرکٹر نے واقعے کے بارے میں اسٹیدیم کے سیکیورٹی حکام کو بتایا اور اس شخص کی نشاندہی بھی کی۔

عمران طاہرنےسماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹرپرفینزکی جانب سےسپورٹ کرنےپران کا شکریہ ادا کیاکرتے ہوئے کہنا تھا کہ وہ ہرکسی سے محبت کرتے ہیں چاہےاس کاتعلق کسی بھی ملک نسل یا مذہب سے ہو، دنیا بھرمیں کرکٹ کھیل کر صرف دوست ہی بنائے ہیں۔

loading...
loading...