نیب ریفرنسز:نوازشریف اورمریم نوا زکو 4 روز کیلئے حاضری سے استثنیٰ مل گیا

فائل فوٹو

فائل فوٹو

اسلام آباد:نیب ریفرنسز میں سابق وزیراعظم نوازشریف اور ان کی صاحبزادی مریم نواز کو 4روز کیلئے احتساب عدالت میں حاضری سے استثنا مل گیا ۔

منگل کو اسلام آباد کی احتساب عدالت کے جج محمد بشیر نے شریف خاندان کیخلاف ایون فیلڈ اورالعزیزیہ اسٹیل ملز ریفرنس کی سماعت کی۔

مسلم لیگ ن کے قائد نوازشریف اوران کی صاحبزادی مریم نواز آج احتساب عدالت میں پیش نہیں ہوئے جبکہ کیپٹن ریٹائرڈ محمد صفدر عدالت میں موجود تھے۔

احتساب عدالت نے نوازشریف اور مریم نواز کی جانب سے 7روز کےاستثنیٰ کی درخواست پرفیصلہ سناتے ہوئے 4روز کیلئے حاضری سے استثنیٰ منظورکرلیا۔

سماعت کے آغاز پر وکیل خواجہ حارث عدالت پہنچے تو جج محمد بشیر نے پوچھاکیا وکالت نامےوالی درخواست واپس لےرہےہیں؟۔

خواجہ حارث نے جواب دیا کہ پہلے ایک اور درخواست دینی ہے،بطور وکیل مؤقف اپنانامیرا حق ہے،ہمیں بھی معلوم ہوجائے گا کہ کیس اکھٹے چلیں گے یا علیحدہ۔

نواز شریف کے دستبردار ہونے والے وکیل خواجہ حارث کارروائی میں دوبارہ شامل ہوگئے۔

عدالت نے خواجہ حارث کی وکالت نامہ واپس لینے کی درخواست خارج کردی ،کل سے خواجہ حارث دوبارہ دلائل دیں گے۔

نواز شریف کے وکیل جہانگیرجدون نے مؤقف اپنایا کہ پریس کانفرنس کے ذریعے ملزمان کو سزا دینے کی باتیں کی جارہی ہیں جوعدالت پردباؤ ڈالنے کے مترادف ہے۔

جج محمد بشیرنے کہا عدالت کی طرف سے انہیں کہہ دیں مخالفین فریق نہیں توکیوں بات کررہے ہیں؟ ،عدالت نے سماعت ایک روز کیلئے ملتوی کردی۔

loading...
loading...