نواز شریف پر رقم بھارت منتقل کرنے کا الزام، چیئرمین نیب آج طلب

فائل فوٹو

فائل فوٹو

اسلام آباد:قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے قانون و انصاف نےسابق وزیراعظم نوازشریف پر منی لانڈرنگ کے ذریعے رقم بھارت منتقل کرنے کے الزامات پر آج چیئرمین نیب جسٹس (ر)جاوید اقبال کو طلب کرلیا۔

سابق وزیراعظم نوازشریف پر اربوں ڈالر کی منی لانڈرنگ کے الزام کو لے کر قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی ایکشن میں آگئی۔

قائمہ کمیٹی برائے قانون وانصاف کا اجلاس آج ہوگا ، جس کی صدارت چیئرمین کمیٹی چودھری اشرف کریں گے،اجلاس میں چیئرمین نیب جسٹس (ریٹائرڈ) جاوید اقبال کووضاحت کیلئے طلب کیا گیا ہے۔

اجلاس میں نوازشریف پر 4 ارب 90 کروڑ ڈالر منی لانڈرنگ کے ذریعے بھارت منتقل کرنے کے الزام کا جائزہ لیا جائے گا۔

قائمہ کمیٹی رانا حیات کے پیش کردہ پوائنٹ آف آرڈر کا جائزہ لے گی، رانا حیات نے نواز شریف پر منی لانڈرنگ کے نیب الزامات پر پوائنٹ آف آرڈر جمع کرایا تھا۔

کمیٹی لیگل پریکٹیشنرز اینڈ بار کونسلز ترمیمی بل 2018ء کا بھی جائزہ لے گی جبکہ آئین میں 30ویں ترمیم سے متعلق بل بھی زیرِ بحث آئے گا۔

قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی 19ارکان پر مشتمل ہے، پیپلزپارٹی کے 2 ارکان کے استعفے کے بعد تعداد 17 رہ گئی ہے۔

قوائد کے مطابق چیئرمین کمیٹی سمیت کم ازکم 5 ارکان کی اجلاس میں موجودگی سے کورم پورا ہوتا ہے، دوران اجلاس کورم ٹوٹ بھی جائے تو کارروائی جاری رکھنے میں کوئی قانونی رکاوٹ نہیں۔

loading...
loading...