لیگی حکومت میں روپیہ بے قدری کا شکار

ruppeessimage

اسلام آباد: ن لیگ کے دور حکومت میں روپیہ مسلسل بے قدری کا شکار رہا، پانچ سال کے دوران روپے کی قدر میں بیس فیصد کمی ریکارڈ کی گئی، ڈالر ایک سو انیس روپے پر پہنچ گیا۔

مسلم لیگ نون کے پانچ سال، جہاں معیشت کے دیگر شعبوں پر بھاری گزرے وہیں پاکستانی کرنسی کی وقعت بھی کم ہوگئی۔ دوہزار تیرہ میں  انٹربینک میں  ڈالر اٹھانوے روپے پچپن پیسے اور اوپن مارکیٹ میں سو روپے کے لگ بھگ تھا جو حکومت کے اقتدار میں آنے کے بعد ستمبر میں ایک سو پانچ روپے اور ایک سو آٹھ روپے پر پہنچ گیا۔

مارچ دوہزار آٹھارہ میں ڈالر پانچ روپے اضافے سے ایک سو دس روپے اور اوپن مارکیٹ میں ایک سو تیرہ روپے پر پہنچ گیا جبکہ اپریل میں ایک بار پھر روپے کی بے قدری کے نتیجے میں ڈالر ایک سو پندرہ روپے اکسٹھ پیسے پر موجود ہے جبکہ اوپن مارکیٹ میں ایک ڈالر ایک سو انیس روپے سے بھی زائد میں مل رہا ہے، اس طرح پانچ سال کے دوران روپے کی قدر میں تقریبا بیس فیصد کمی ہوئی۔

loading...
loading...