لندن فلیٹس ریفرنس:نواز شریف کی جانب سے جہانگیرجدون کاوکالت نامہ جمع

فائل فوٹو

فائل فوٹو

اسلام آباد:احتساب عدالت میں لندن فلیٹس ریفرنس میں سابق وزیراعظم نوازشریف کی جانب سے جہانگیرجدون نے وکالت نامہ جمع کرادیا ۔

بدھ کو اسلام آباد کی احتساب عدالت کے جج محمد بشیر نے شریف خاندان کیخلاف لندن فلیٹس  ریفرنس کی سماعت کی ،نوازشریف اورمریم نوازاستثنیٰ کے باعث حاضرنہیں ہوئے۔

 دوران سماعت نوازشریف کی جانب سے جہانگیرجدون نے وکالت نامہ داخل کرا دیا ۔

مریم نواز کے وکیل امجد پرویز طبعیت ناساز ہونے کے باعث غیرحاضررہے، جس پر عدالت نے امجد پرویز کو 19 جون کو حتمی دلائل کیلئے آخری موقع دے دیا۔

وکیل صفائی امجد پرویزکی غیرحاضری پر نیب پراسیکیورٹر اور معاون وکیل میں گرما گرمی بھی ہوئی۔

نیب پراسیکیوٹرسردارمظفرنےاسے تاخیری حربے قراردیتےہوئے کہاکہ اگروکلا ءکیس نہیں چلا سکتے توملزمان کوبلائیں وہ خود اپنا کیس لڑیں مرضی کا وقت لینے کےبعد کہتے ہیں طبیعت خراب ہے۔

معاون وکیل نے نیب پراسیکیوٹر کی زبان پراعتراض کرتےہوئے کہاکہ قانون میں اخلاقیات کا پرچہ بھی ہوتا تھا جوآج نظرنہیں آرہا۔

نیب نے نوازشریف کے وکیل جہانگیرجدون سے دلائل دینے کا درخواست کی توبیرسٹرجہانگیرجدون نے کلائنٹ سے ہدایت لینے کا مؤقف اپنایا۔

معاون وکیل نے کہا کہ کسی دوسرے وکیل کیلئے مقدمہ آگے چلانا مشکل ہوگا ، جس پرجج محمد بشیرنے کہاکہ جہانگیر جدون پہلے روز سے عدالت آ رہے ہیں اورکیس کواچھی طرح سمجھتے ہیں،عدالت نے سماعت 19 جون تک ملتوی کردی۔

loading...
loading...