سابق امام کعبہ کے ہاتھوں جوا خانے کے افتتاح کی خبریں غلط نکلیں

Untitled-1

جدہ: سعودی عرب کے دارالحکومت ریاض میں سابق امام کعبہ اور موجودہ سعودی انٹرٹینمنٹ بورڈ کے اہم رکن شیخ عادل بن سالم بن سعید الکبانی  کے  ہاتھوں قمار خانہ اور جوا خانے کا افتتاح کرنے کی خبریں غلط نکلیں۔

آج کل سوشل میڈیا پر ایک ویڈیو گردش کررہی ہے ،جس میں ایک بڑے ہال کے اندر سعودی شہریوں کو دکھایا گیا ہےجو بیٹھے تاش(کارڈ) کھیلتے نظر آرہے ہیں، جبکہ  یہ  کہا  جارہا  ہے  کہ  سابق امام کعبہ نے سعودی عرب  میں  جوا خانے  کا  افتتاح کردیا  ہے ۔

تحقیق کے بعد افواہیں بالکل غلط اور من گھڑت قرار دیدی گئی ہیں، کیونکہ امریکی خبر رساں ادارے سی این این نے ایک رپورٹ جاری کی ہے جس  میں  بتایا  گیا  ہے کہ سعودی عرب  میں  کھیل’بالٹ’ کی  پہلی   سرکاری  چیمپئن  شپ  کا  سابق  امام  کعبہ نے  عادل الکبانی  نے افتتاح کیا۔  

سوشل میڈیا پر گردش کرنےوالی ویڈیو اور تصاویر دراصل اسی چیمپئن شپ کی ہی ہیں ، جن میں سابق امام کعبہ کو تاش کھیلتے دکھایا گیا ہے۔

سعودی عرب کی سرکاری خبر رساں ایجنسی ‘SPA ‘ کے مطابق اس چیمپئن شپ کا  انعقاد بدھ کو  جنرل اتھارٹی،  ایپیکس کانفرنس اور نمائش مرکز میں اور پرنس فیصل بن فہیم اولمپیاڈ کمپلیکس میں گرین ہال میں کیا گیا ۔

اس ٹورنامنٹ کے لئے 85 ہزار سے زائد افراد نے رجسٹریشن کروائی جن میں سے 12 ہزار 2 سو اٹھاسی افراد کا انتخاب کیا گیا ،ان فراد کیلئے 384 سے زائد میز(ٹیبل) دیئے گئے۔

خیال رہے کہ یہ کارڈ گیم سعودی عرب میں ‘بلوٹ’ کے نام سے جانی جاتی ہے، جسے انڈور گیمز کے طور پر کھیلا جاتا ہے۔ جبکہ اس میں تمام عمر کے افراد حصہ لے سکتے ہیں۔

یاد رہے کہ رواں ماہ سعودی عرب میں 35سال بعد سینما گھر کھول دیا جائے گا۔

loading...
loading...