دہشت گردوں کو پناہ دینا پاکستان کیلئے نقصان دہ ہوگا،ڈونلڈ ٹرمپ

فائل فوٹو

فائل فوٹو

آرلنگٹن: امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کا کہنا ہے کہ دہشت گردوں کو پناہ دینا پاکستان کیلئے نقصان دہ ہوگا۔

منگل کو آرلنگٹن  کے فوجی اڈے پر خطاب میں امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے پاکستان میں دہشت گردوں کی محفوظ پناہ گاہوں کا الزام لگا دیا ہے۔

پاکستان اور افغانستان سمیت جنوبی ایشیا کے حوالے سے امریکی صدر نے اپنی پالیسی کا اعلان کردیا ہےاور ہر بار کی طرح اس بار بھی پاکستان کی دہشت گردی کے خلاف کوششوں کو پس پشت ڈال دیا۔

 انہوں نے کہا کہ پاکستان ان لوگوں کو محفوظ پناہ گاہیں فراہم کرتا ہے جو ہمارے لوگوں کو مارتے ہیں ،امریکا   پاکستان کو اربوں ڈالر دے رہا ہے  اور پاکستان ان  دہشت گردوں کو پناہ دے رہا ہے جو ہمارے دشمن ہیں ،جن کے خلاف ہم لڑ رہے ہیں پاکستان کو اسے فوری طور پر تبدیل کرنا ہوگا۔

ڈونلڈ ٹرمپ نے کہا کہ امریکا  کسی بھی ایسے ملک سے شراکت داری نہیں کرے گا جو  امریکی فوجی اور عوام کو نشانہ بنائیں، اب وقت آگیا ہے کہ پاکستان اپنے ملک میں ان تمام  دہشت گردوں کا خاتمہ کرے جو وہاں پناہ لیتے ہیں اور امریکیوں کو بھی نشانہ بناتے ہیں۔

صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے پاکستان کو دھکمی دیتے ہوئے کہا کہ اب امریکا پاکستان میں دہشت گردوں کی محفوظ پناہ گاہوں پر خاموش نہیں رہے گا،طالبان اور دیگر دہشت گرد گروپ خطے کیلئے خطرہ ہیں، امریکا سے شراکت داری پاکستان کیلئے سود مند ثابت ہوگی لیکن اگر مسلسل دہشت گردوں کا ساتھ دے تو نقصان اٹھانا ہوگا۔

اپنے خطاب میں امریکی صدر نے  کہا کہ  ہم چاہتے ہیں پاکستان افغانستان میں امن کیلئے امریکا کی مدد کرے ۔