خورشید شاہ کا پی ٹی آئی کانگراں وزیراعظم کے ناموں کے اعلان پر اظہارافسوس

فائل فوٹو

فائل فوٹو

اسلام آباد:قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف خورشید شاہ نے تحریک انصاف کی جانب سے نگراں وزیراعظم کے ناموں کے اعلان پر افسوس کا اظہارکیا۔

 منگل کو اپوزیشن لیڈر نے خورشید شاہ کاتحریک انصاف کی جانب سے نگراں وزیراعظم کے ناموں کے اعلان پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہنا تھاکہ تحریک انصاف سے ہمیشہ انہوں نے رابطہ کیا اوران کے رہنماؤں سے مشاورت کی تاہم نگراں وزیراعظم کے ناموں کا میڈیا سے پتا چلنے پرافسوس ہوا ، نام آنے کے بعد تحریک انصاف کے ساتھ مشاورت کی ضرورت نہیں کیوں کہ اب یہ ذمہ داری وزیراعظم اوراپوزیشن لیڈر کی ہے ۔

خورشید شاہ کا کہنا تھاکہ حکومت سے 15مئی تک نگران وزیراعظم کا نام فائنل کرنا کا کہا ہے ، ہمیں سوچ سمجھ کرفیصلے کرنے چاہیے ۔

نوازشریف کی تقریرپرپابندی کے حوالے سے خورشید شاہ کا کہنا تھاکہ اظہاررائے پرپابندی سے جمہوریت اورآمریت میں فرق مٹ جائے گا ،نوازشریف کوملک اوراداروں کے خلاف بات نہیں کرنی چاہیے کیوں کہ ملکی قانون اظہاررائے کوریاست کیخلاف استعمال کرنے کی اجازت نہیں دیتا ، پیپلزپارٹی نے کبھی ریاست اوراداروں کے خلاف نہیں سوچا ۔

قائد حزب اختلاف کا کہنا تھاکہ نوازشریف سمیت کسی بھی سیاسی جماعت سے مذاکرات کے دروازے بند نہیں سیاست میں کبھی حرف آخرنہیں ہوتا ، آج کا دشمن کل ساتھی بن سکتا ہے ۔

 انہوں نے مزید کہا کہ عدلیہ چیف ایگزیکٹوکوبلاسکتی ہے تاہم ایگزیکٹو کے اختیارات صرف ایگزیکٹوہی استعمال کرے ۔ عدلیہ سے گزارش ہے وہ اس سےمتعلق سوچیں۔