ترکی میں پارلیمانی نظام کے بجائے صدارتی نظام نافذ

فائل فوٹو

فائل فوٹو

انقرہ:ترکی میں پارلیمانی نظام کے بجائے صدارتی نظام نافذ کردیا گیا، صدر رجب اردوان نے مزید اختیارات کے ساتھ حلف اٹھا لیا۔

ترکی میں نئے دور کی ابتداء  ہوگئی،ملک میں پارلیمانی نظام کے بجائے صدارتی نظام لاگو کردیا گیا ،وزیراعظم کا عہدہ اور پارلیمنٹ کے کافی اختیارات ختم کردئے گئے ہیں ۔

صدر رجب طیب اردوان نے مزیداختیارات کےساتھ دوسری مدت کیلئے حلف اٹھالیا، صدر کواب  چیف ایگزیکٹو کی حیثیت حاصل ہوگئی ۔

انقرہ میں حلف برداری کے تقریب کے دوران صدر رجیب اردواننے کہا کہ اب ملک کے  ہر شعبے میں میں ترقی ہوگی اور عوام خوشحال ہوں گے۔

سابق وزیراعظم بن علی یلدرم کو  پارلیمنٹ کا اسپیکر نامزد کیاگیا ہےجبکہ صدر کے داماد کووزیر خزانہ کا عہدہ دے دیا گیا   ۔

loading...
loading...