بجلی کا بڑا بریک ڈاون ، شہری کلبلا اٹھے

electricityimage

لاہور، پشاور، ملتان: گدو مظفر گڑھ لائن میں خرابی کے باعث لاہور، ملتان، بہاولپور سمیت پنجاب اور خیبرپختونخوا کے بیشتر شہر بجلی سے محروم ہوگئے جبکہ پاور ڈویژن کا کہنا ہے کہ جزوی طور پر بجلی کی بحالی کا کام شروع کردیا گیا ہے۔

بجلی کے بریک ڈاؤن کے باعث پنجاب کے صدر مقام لاہور میں بجلی مکمل طور پر غائب ہوگئی، پنجاب اسمبلی کے اجلاس کے دوران بجلی نہ ہونے پر اپوزیشن کی جانب سے شدید احتجاج کیا گیا۔

نیو اسلام آباد ایئر پورٹ پر بھی بجلی کا بریک ڈاؤن رہا جس کے باعث مسافروں کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑا، ملتان، بہالپور، چکوال سمیت پنجاب کے دیگر شہروں میں بھی بجلی غائب ہوگئی۔

خیبرپختونخوا کے شہر لکی مروت میں صبح سوا نو بجے سے بجلی غائب ہے اور سوات میں صبح  دس بجے سے بجلی کی فراہمی معطل ہے۔

ترجمان پاور ڈویژن کا کہنا ہے کہ بجلی کا بریک ڈاؤن تربیلا پاور پلانٹ کے باعث نہیں بلکہ گدو مظفر گڑھ لائن میں خرابی سے ہوا۔

ترجمان نے کہا کہ تربیلا، منگلا اور غازی بروتھا پاور اسٹیشن کو بحال کر دیا گیا، بجلی کی پیداوار 12 ہزار میگاواٹ ہو گئی ہے اور مرحلہ وار بجلی کی مکمل پیداوار نظام میں شامل ہو جائے گی۔

ترجمان پاور ڈویژن نے دعویٰ کیا کہ اسلام آباد کے 80 فیصد علاقوں میں بجلی بحال کر دی ہے جبکہ دیگر شہروں میں بھی جزوی طور پر بحالی شروع ہوگئی ہے۔

ترجمان پاور ڈویژن کا مزید کہنا ہے کہ ملکی سطح پر فالٹ کو قابو پانے کی کوشش کی جارہی ہے، کراچی، بلوچستان اور سدرن پنجاب میں صورتحال ٹھیک ہے۔

دوسری جانب ترجمان ایٹمی توانائی کمیشن کا کہنا ہے کہ تربیلا پاور پلانٹ سے شروع ہونے والی ٹرپنگ سے چاروں چشمہ نیوکلیئر پاور پلانٹس بھی ٹرپ کرگئے۔

وفاقی وزیر پاور ڈویژن اویس لغاری نے قومی اسمبلی کے اجلاس کے دوران اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ خیبرپختونخوا اور پنجاب میں بجلی کا بریک ڈاؤن ہوا تھا تاہم چند گھنٹوں میں صورتحال بہتر ہو جائے گی۔

اویس لغاری کا مزید کہنا تھا کہ بجلی کے بریک ڈاؤن سے متعلق شام تک انکوائری مکمل ہوجائے گی۔ ذرائع وزارت پانی و بجلی کے مطابق ملک میں بجلی کی طلب 20 ہزار میگاواٹ سے زائد ہے۔  ادھر پنجاب کی صنعتوں کو 10 گھنٹے لوڈشیدنگ کا اعلامیہ بھی جاری کردیا گیا جس پر آج سے عملدرآمد ہوگا۔

loading...
loading...