این اے 125:سعد رفیق کی اپیل منظور، الیکشن ٹریبونل کا فیصلہ کالعدم قرار

فائل فوٹو

فائل فوٹو

لاہور:سپریم کورٹ نے قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 125میں مبینہ دھاندلی کیس کا فیصلہ سناتے ہوئے مسلم لیگ (ن)کے رہنماءخواجہ سعد رفیق کی اپیل منظور کرتے ہوئے الیکشن ٹریبونل کافیصلہ کالعدم قرار دے دیا۔

جمعرات کوسپریم کورٹ لاہور رجسٹری میں قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 125میں مبینہ دھاندلی کیس کا فیصلہ جسٹس عظمت شیخ کی سربراہی میں سپریم کورٹ کے 2رکنی بینچ نے لاہور رجسٹری میں سنایا۔

عدالت عظمیٰ نے 2015میں ٹریبونل کی جانب سے حلقے کے انتخابی نتائج کالعدم قرار دیئے جانے کے فیصلے کو کالعدم قرار دے دیا۔

اس طرح لیگی رہنماءخواجہ سعد رفیق انتخابات 2013 میں دھاندلی کے الزامات سے بری ہوگئے۔

دوہزار تیرہ کے انتخابات میں این اے 125میں مسلم لیگ (ن)کے رہنما ءخواجہ سعد رفیق نے تحریک انصاف کے حامد خان کو شکست دی تھی جس کے بعد حامد خان نے انتخابات میں دھاندلی کا الزام لگایا تھا۔

لیگی رہنما ءخواجہ سعد رفیق نے ٹریبیونل کے فیصلے کو چیلنج کیا تھا جس پر سپریم کورٹ نے آج فیصلہ سناتے ہوئے قرار دیا ہے کہ 2013کے انتخابات میں این اے 125کے الیکشن میں دھاندلی نہیں ہوئی۔

loading...
loading...