العزیزیہ اسٹیل ملز اور فلیگ شپ ریفرنسز کی سماعت 30جولائی تک ملتوی

فائل فوٹو

فائل فوٹو

اسلام آباد:اسلام آباد کی احتساب عدالت نے العزیزیہ اسٹیل ملز اور فلیگ شپ ریفرنسز کی سماعت 30جولائی تک ملتوی کردی۔

بدھ کو فیڈرل جوڈیشل کمپلیکس میں احتساب عدالت کے جج محمد بشیر نے شریف خاندان کیخلاف 2ریفرنسز کی سماعت کی۔

اس موقع پراس موقع پر العزیزیہ اسٹیل مل اور فلیگ شپ ریفرنسز کے جیل ٹرائل کا نوٹیفکیشن بھی احتساب عدالت میں پیش کیا گیا۔

جج محمد بشیر نے کہا کہ  خواجہ حارث  صاحب بتائیں جیل ٹرائل کے معاملے میں کیا کیا جائے۔

خواجہ حارث بولے کہ آپ کے نوٹس میں لانا چاہتے ہیں کہ آپ ان ریفرنسز پر سماعت نہ کریں۔

جج صاحب نے کہا کہ ہائیکورٹ کو خط لکھ دیا ہے منتقلی میرا اختیار نہیں۔

خواجہ  حارث نے کہاکہ بال ابھی آپ کے کورٹ میں ہے معذرت اور انکار میں فرق ہوتا ہے۔

نیب پراسیکیوٹر سردار مظفر عباسی کا موقف تھا کہ  عدالت پہلے کہہ چکی ہے کیس منتقل کرنے کا اختیار احتساب عدالت کے پاس نہیں،کوئی قانونی قدغن نہیں کہ  جج صاحب آپ کیس کو آگے نہ بڑھا سکیں ،ساری شہادتیں آپ کے سامنے ریکارڈ ہوئیں آپ کو ہی ٹرائل مکمل کرنا ہو گا۔

خواجہ حارث نے کہا کہ جب تک ہائیکورٹ کا فیصلہ نہیں آ جاتا ہم کیس میں مزید آگے دلائل نہیں دے سکتے، آپ اپنے ضمیر کے مطابق بھی دیکھیں، کیا آپ کو یہ کیس سننے چاہیں، آپ نے جو حکم کرنا ہے کردیں،سماعت 30جولائی تک ملتوی کردی گئی ۔

loading...
loading...