اسپاٹ فکسنگ اسکینڈل، خالدلطیف اور محمد عرفان کے بیان ریکارڈ

File Photo

File Photo

اسلام آباد: اسپاٹ فکسنگ اسکینڈل میں خالد لطیف اور محمد عرفان نےلاہور میں ایف آئی اے حکام کو بیانات ریکارڈ کروا دیئے۔ شرجیل خان اور شاہ زیب حسن کل پیش ہوں گے۔ جرم ثابت ہونے پر کرکٹرز کیخلاف زیر دفعہ چار سو نو اور اینٹی کرپشن کی دفعہ پانچ کے تحت مقدمہ درج کیا جائے گا۔

وفاقی تحقیقاتی ادارےایف آئی اےنےاسپاٹ فکسنگ اسکینڈل کی تحقیقات کیلئےپانچوں معطل کرکٹرزکوطلب کیا ہے، معطل کرکٹرزخالد لطیف اورمحمد عرفان نےایف آئی اےلاہورمیں پیش ہوکراپنےبیانات ریکارڈ کروادئیے۔

دونوں کرکٹرزکےبیانات  سائبر کرائم سرکل میں ریکارڈ کیے گئے۔ شرجیل خان اورشاہ زیب حسن کل بیانات ریکارڈ کروائیں گےجبکہ پانچویں معطل کرکٹرناصرجمشید برطانیہ میں ہیں۔

ایف آئی اے ذرائع کے مطابق جرم ثابت ہونےپرکرکٹرز کیخلاف زیردفعہ چار سو نو اور اینٹی کرپشن ایکٹ کی دفعہ پانچ کے تحت مقدمہ درج کیا جائے گا۔

پی سی بی نے کرکٹرز کے آٹھ موبائل فونز بھی فرانزک کے لئے ایف آئی اے کو فراہم کردئیےہیں،ایف آئی اے ذرائع کے مطابق معطل کرکٹرز کے بیانات کی روشنی میں تفتیش کو آگے بڑھایا جائے گا جس کے بعد انہیں دوبارہ بھی طلب کیا جاسکتا ہے۔