مرد حضرات صحت سے متعلق ان علامات کو ہر گز نظرانداز نہ کریں

فائل فوٹو

فائل فوٹو

بظاہر معمولی نظر آنے والی علامات جان لیوا بیماری کا اشارہ ہوتی ہیں۔ اکثر مرد ان اشاروں کو نظر انداز کر دیتے ہیں اور بعد میں پچھتاتے ہیں۔

بہت زیادہ شراب نوشی  ڈپریشن کی علامت اور کمزوری دل کے امراض کا ابتدائی اشارہ ہو سکتی ہے.ماہرین نے مردوں کی صحت کے حوالے سے کچھ ایسی ہی علامات بتائی ہیں جنہیں نظرانداز نہیں کیا جانا چاہیے.ماہرین کا کہنا ہے کہ مسلسل کمزوری محسوس ہو تو سمجھ لینا چاہیے اس مرد کو دل کا کوئی عارضہ لاحق ہو چکا ہے۔

اعضاء کو خون کی مناسب فراہمی کی ضرورت ہوتی ہے۔ کمزوری محسوس ہونے کا واضح مطلب یہ ہوتا ہے کہ اس عضو کو خون کی سپلائی مناسب طریقے سے نہیں ہو رہی جس سے سمجھ لینا چاہیے کہ آپ کا دل ٹھیک کام نہیں کر رہا۔

 ڈاکٹر پرساد کا کہنا ہے کہ بعض اعضاء میں خون کی نالیاں باقی جسم کی خون کی نالیوں سے زیادہ باریک ہوتی ہیں اور دل کی کارکردگی کم ہونے سے ان نالیوں میں خون کی فراہمی متاثر ہوتی ہے اور قوت میں کمی محسوس ہوتی ہے۔ اس لئے جب یہ علامت ظاہر ہو تو فوری طور پر کسی ماہر امراض قلب سے رابطہ کرنا چاہیے۔

ڈاکٹر پروفیسر ایشلے گراسمین کا کہنا ہے کہ موٹاپے کی وجہ  بعض مرد وں میں نسوانی علامات ظاہر ہونا شروع ہوجاتی ہیں۔ ایسے مردوں کو اپنا وزن کم کرنا چاہیے اور شراب نوشی سے بچنا چاہیے لیکن بعض اوقات ایسا  موٹاپے  کی وجہ سے نہیں  بلکہ ایک بیماری کی وجہ سے ہوتا ہے جسے ‘گائنی کومیسشیا’ کہا جاتا ہے۔ اس مرض کی وجہ ٹیسٹاسٹرون اور اوسٹروجن نامی ہارمونز میں عدم توازن کی وجہ سے ہوتا ہے۔

اوسٹروجن نامی ہارمون سینے کےبافتوں کو  بڑھاتا ہے لیکن چونکہ مردوں میں ٹیسٹاسٹرون کی مقدار بہت زیادہ پیدا ہوتی ہے جو اوسٹروجن کے اس عمل کو روک دیتی ہے۔ یہ اس بات کی نشانی ہے کہ متاثرہ مرد کا جگر کسی بیماری کی زد میں ہے کیونکہ ان ہارمونز میں بگاڑ اسی وقت پیدا ہوتا ہے جب مرد کے جگر کی کارکردگی متاثر ہو رہی ہو۔

ماہرین کہتے ہیں کہ اگر آپ کو رات کے وقت بار بار پیشاب آتا ہے اور آپ بیدار ہو کر واش روم جاتے ہیں تو اس کا مطلب یہ ہے کہ آپ کے مثانے کے غدودبڑھ رہے ہیں یا آپ ان غدودوں کے کینسر میں مبتلا ہو رہے ہیں۔ خصیوں میں بعض اوقات گومڑی سی بن جاتی ہے اور سوجن پیدا ہو جاتی ہے۔ اکثراوقات یہ اتنی زیادہ خطرناک نہیں ہوتی اور اس کے علاج کی ضرورت نہیں ہوتی لیکن اس کی ایک قسم ایسی ہے جو خصیوں کے کینسر کا باعث بنتی ہے۔ اگر کسی مرد کو پیشاب کے ساتھ خون آنے لگے تو اس صورت میں ترجیحی بنیادوں پر اپنے معالج سے رابطہ کرنا چاہیئے۔

loading...
loading...