دو گھنٹے تک کچن صاف کرنے والی خاتون جاں بحق

kit

میڈرڈ سے تعلق رکھنے والی 30 سالہ خاتون جسم میں زہر پھیلنے کے باعث جاں بحق ہوگئیں۔خاتون کی موت دو گھنٹوں تک امونیا کی حامل شے سے کچن کی صفائی کرنے کے سبب ہوئی۔

ایمرجنسی سروسز کے مطابق خاتون نے پیر کودوپہر تین بجے 112پر کال کی اور بتایا کہ انہیں چکر آرہے ہیں۔

فائرفائٹرز کو بروقت  خاتون کےگھر بھیجا گیا۔ دروازے پر کسی نے جواب نہیں دیا لہٰذا انہیں دروازہ توڑ کر اندر گُھسنا پڑا۔فائرفائٹرز نے خاتون کو کچن کے فرش پر پڑا ہوا پایا۔انہیں دل کا دورہ پڑا تھا۔

ڈاکٹروں نے خاتون کو مردہ قرار دینے سے قبل 30منٹ تک سی پی آر کی کوشش کی۔

سیکیورٹی اور ایمرجنسی ایجنسی کے ترجمان کا کہنا تھا کہ ہر چیز اس بات کی جانب اشارہ کررہی ہےکہ ان کے جسم میں زہر امونیا سانس کے زریعے جانے کے باعث پھیلا۔

امونیا عموماً گلاس صاف کرنے والے، اوون صاف کرنے والے اور ٹوائلٹ صاف کرنے والے بلیچ میں پایا جاتا ہے۔

زیادہ حدت کے کیمیکل کے سامنے سے کسی فرد کی آنکھ، ناک یا گلا جل سکتا ہے۔یہ پھیپھڑوں کو ناکارہ کرنے کا سبب بھی بن سکتاہے اور دماغ نقصان بھی پہنچا سکتا ہے۔

Daily mail بشکریہ

loading...
loading...