کیا بھارتی ڈرامے ساس ، بہو کے موضوع سے باہر نکل آئے؟

gopi000000000000

ممبئی:بھارتی ڈرامہ انڈسٹری پر آئے روز یہ الزام لگتا ہے کہ یہاں روایتی ساس بہو کے موضوعات کو  کچھ زیادہ ہی اجاگر کیا جا تا ہے۔

انڈین ڈراموں میں معاشی ،معاشرتی اور سماجی مسائل کی عکاسی کرنے کی بجائے گھریلو اور غیر اہم  موضوعات پر  زیادہ توجہ مرکوز کی جاتی ہے۔

بھارت میں لوگوں کی ایک بڑی تعداد غربت کی لکیر سے نیچے زندگی گزار رہی ہے لیکن ڈراموںمیں ہمیشہ کرداروں کو غیر معمولی طور پر امیر دکھایا جاتا ہے۔

پیسوں کی فراوانی اور خواتین کے حد سے زیادہ بناوٹی انداز کو پیش کیا جا تا ہے ،یہی وجہ ہے کہ  وہاں کے ڈرامے ہمیشہ تنقید کی زد میں رہتے ہیں۔

تاہم،  بھارتی ٹی وی کے مشہور ڈرامے ناویا  سے شہرت کی بلندی کو چھونے والی اداکارہ  سومیاکا خیال ہے کہ  اب وقت بدل رہا ہے،بھارتی ڈراموں میں اب نئے اور اچھے خیالات کو موضوع بنا یا جا رہا ہے۔

ان کا کہنا ہے کہ بھارتی ڈرامہ اب ساس بہو کے لڑائی جھگڑوں سے بہت آگے نکل گیا ہے۔’یہی وجہ ہے بیرون ملک انڈین ڈراموں کی مانگ میں اضافہ ہو رہاہے’۔

بشکریہ :ہندوستان ٹائمز

loading...
loading...