سری دیوی کی موت حادثہ نہیں قتل، بڑا انکشاف

sri-devi

کیرالا جیل کے ڈائریکٹر جنرل پولیس رشی راج سنگھ نے ایسا انکشاف کیا ہے جس نے پوری بولی وڈ انڈسٹری کو ہلا کر رکھ دیا ہے۔

غیرملکی میڈیا رپورٹس کے مطابق رشی راج سنگھ نامی افسر نے انکشاف کیا ہے کہ بولی وڈ کی لیجنڈ اداکارہ سری دیوی کی موت حادثے کی وجہ سے نہیں ہوئی بلکہ انہیں قتل کیا گیا تھا۔

کیرالا جیل کے ڈی جی پی شری راج سنگھ کے ایک مقامی اخبار میں شائع ہونے والے انٹرویو میں آنجہانی فارنزک سرجن ڈاکٹر عما دھتن کا حوالہ دیتے ہوئے انکشاف کیا کہ ڈاکٹر نے مجھے بتایا تھا کہ سری دیوی کی موت قتل کا شاخسانہ ہوسکتی ہے۔

اس انٹرویو میں شری راج سنگھ کے مطابق جب انہوں نے ڈاکٹر سے وجہ پوچھی تو ڈاکٹر نے کچھ باتوں کی نشاندہی کی اور کہا کہ کئی ایسے ثبوت موجود ہیں جو یہ ثابت کرسکتے ہیں کہ لیجنڈ اداکارہ کی موت محض ایک حادثہ نہیں بلکہ قتل تھا۔

شری راج نے مضمون میں یہ بھی لکھا کہ ڈاکٹر عمادھتن کے مطابق ‘اگر سری دیوی زیادہ نشے میں ہوتیں تو تب بھی ایک پاؤں کے ساتھ باتھ ٹب میں ڈوب نہیں سکتی تھی’۔

ڈاکٹر عمادھتن کے مطابق ‘کیونکہ ایسا ناممکن ہے کہ کسی دوسرے شخص کی ڈبانے کی کوشش کے بغیر کوئی بھی ایک پاؤں یا سر کے ساتھ باتھ ٹب میں ڈوب جائے’۔

واضح رہے کہ 54 سالہ لیجنڈ بولی وڈ اداکارہ سری دیوی 24 فروری 2018 کو دبئی کے ہوٹل کے باتھ روم میں مردہ حالت میں پائی گئی تھیں جسے ایک حادثاتی موت قرار دیا گیا تھا۔

loading...
loading...