علی ظفر،میشاشفیع تنازع: کیس حتمی مراحل میں داخل

فائل فوٹو

فائل فوٹو

 لاہور سیشن عدالت میں گلوکار علی ظفر میشاء شفیع ہراسگی  کیس حتمی مراحل میں داخل۔ عدالت نے  فلم اسٹار علی ظفر کے منیجر کا بیان قلم بند کرتے ہوئے سماعت 18 جون تک ملتوی کردی۔

لاہور سیشن عدالت میں گلوکارہ میشا شفیع کو ہراساں کرنے کے متعلق کیس کی سماعت ہوئی۔ ایڈیشنل سیشن جج امجد علی شاہ نے کیس کی سماعت کی۔

 دوران سماعت گلوکار علی ظفرکے منیجر طحہ نے اپنا بیان قلم بند کروا دیا۔ مینجر طحہ کا کہنا تھا کہ اس نے علی ظفرکے کردار سے متعلق کبھی غلط بات نہیں دیکھی۔

اس موقع پر علی ظفر نے کہا کہ میشا شفیع نےہراساں کرنے کے بے بنیاد الزامات عائد کیےجن کی وجہ سے دنیا میں شہرت متاثر ہوئی ہے۔

گلوکار علی ظفر نے عدالت سے استدعا کی کہ عدالت میشا شفیع کو 100 کروڑ روپے ہرجانہ ادا کرنے کا حکم دے۔

عدالت نے سماعت 18 جون تک ملتوی کرتے ہوئے آئندہ سماعت پرآخری گواہ کوبیان قلم بند کرانے کے لئے طلب کر لیا ۔

loading...
loading...