عزیزمیاں قوال کو ہم سے بچھڑے 18برس بیت گئے

aziz

ملک کے معروف قوال عزیزمیاں کو ہم سے بچھڑے 18 برس بیت  گئے۔

عبدالعزیز عرف عزیز میاں قوال 17 اپریل 1942 کو پیدا ہوئے، انہوں نے پنجاب یونیورسٹی لاہور سے اردو اور عربی میں تعلیم حاصل کی، ان کا شمار روایتی قوالوں میں ہوتا تھا۔ ان کی کامیابی کا راز ان کی آواز ہی نہیں بلکہ ان کی قوالیوں میں موجود فلسفہ بھی تھا۔

انہوں نے اپنے فنی دور کا آغاز عزیز میاں میرٹھی کی حیثیت سے کیا۔ انہوں نے ابتدائی دور میں فوجی جوانوں کیلئے قوالیاں گائیں۔

کورس میں گائی جانے والی قوالیوں کو بھی انہوں نے دوام بخشا،عزیزمیاں مختلف شعراء کرام کے کلام کو اس طرح پڑھتے تھے جس سے سننے والا اس کے اثر میں محو ہوجاتا تھا جبکہ عزیز میاں کی بیشتر قوالیوں میں مذہبی رنگ بھی نمایاں نظرآتا ہے۔

عزیز میاں قوال 6 دسمبر 2000 کو اپنے مداحواں کو سوگوار چھوڑ کر چلے گئے، لیکن 18 سال گزرنے کے باوجود وہ آج بھی اپنے چاہنے والوں کے دلوں میں زندہ ہیں۔

loading...
loading...