انجلینا جولی اپنے بچوں سے ہاتھ دھو بیٹھ سکتی ہیں

fsafa

بریڈ پٹ  اور انجلینا جولی کی علیحدگی کے بعد بریڈ پیٹ بچوں کے ساتھ  زیادہ وقت گزار رہے ہیں  اور اگر وہ ایسا نہ کریں گے تو ہوسکتا ہے کہ انجلینا جولی اپنے بچوں کی تحویل سے محروم  ہوجائیں گی۔

بلاسٹ کی رپورٹ کے مطابق  جج کا کہنا ہے کہ اگر انجلینا جولی  نے  اپنے بچوں اور  سابقہ شوہر کے رشتے کو بہتر بنانے میں مدد نہیں کی یہ ان کا درمیان رکاوٹ پیدا کی تو ان سے بچوں کی مکمل تحویل چھینی جی سکتی ہے۔

کورٹ کی طرف سے جاری کیے گئے دستاویز میں یہ بات  کہی گئی ہے کہ ‘بچوں کیلئے یہ بےحد ضروری ہے کہ  وہ اپنے والد اور والدہ دونوں کے ساتھ ایک پختہ اور صحت مند رشتہ تعمیر کریں۔’

البتہ کورٹ نے سب سے بڑے 16 سالہ بیٹے  میڈوکس کو یہ اجازت دی ہے کہ وہ اس بات کا خود فیصلہ کریں کہ انہیں اپنے والد  بریڈ پٹ کے ساتھ  کتنا وقت گزارنا ہے۔واضح رہے کہ  میڈوکس کے علاوہ  بریڈ پٹ اور انجلینا کی 4 اور بچیں ہیں جن کے نام پیکس  زہارا، شیلو اور جڑوا ویویانا اور نوکس ہیں۔

سرکاری دستاویز میں انجلینا کو یہ بھی کہا گیا کہ انہیں  بریڈ کو اپنے تمام بچوں کو موبائل فون نمبر دینا ضروری ہے تاکہ بریڈ جب  چاہے اپنے بچوں سے رابطہ کرسکے اس کے علاوہ  کورٹ کے جانب سے انجلینا کو یہ بھی منع کیا گیا ہے کہ وہ اپنے بچوں کے فون میں بریڈ کے مسیجز نہ پڑھیں۔

اسی کے ساتھ ساتھ  کورٹ نے یہ فیصلہ  بھی سنایا تھا کہ  بریڈ ایک ساتھ تمام بچوں کے ساتھ وقت نہیں گزار سکتے بلکہ ایک وقت میں وہ ایک یا دو بچوں کے ساتھ وقت گزار سکتے ہیں۔

کورٹ  نے انجلینا کو سختی سے خبردار  کیا ہے کہ ‘ کم بچیں اگر اپنے والد کو پسند کرنے لگے تو  حالات کا جائزہ لیتے ہوئے کورٹ کا فیصلہ بریڈ  کے حق میں ہوجائے گا جس کے نتیجے میں  بچے  انجلینا کے ساتھ کم وقت گزاریں گے اور  بچوں کی پرائمری تحویل بریڈ کو دے دی جائے گی۔’

بشکریہ: ایم ایس این

loading...
loading...