پی ٹی آئی کا بجٹ پر نظرثانی کا فیصلہ، ٹیکس لگانے پر غور

asadumerimage

تحریک انصاف کی حکومت نے رواں مالی سال کے بجٹ پر نظر ثانی کا فیصلہ کرلیا ہے، بجلی، موبائل فونز، سگریٹس، گاڑیوں کی قیمتوں میں اضافہ کا امکان ہے۔

دو سو ارب روپے تک کے نئے ٹیکس لگانے پر بھی غور ہوگا، پانچ ہزار دو سو اشیاء پر ڈیوٹی بڑھانے سے چالیس ارب روپے کا اضافی ٹیکس حاصل ہوگا،پی ٹی آئی  نے رواں مالی سال کے بجٹ پر نظر ثانی کا فیصلہ کرلیا۔بجلی، موبائل فونز، سگریٹس، گاڑیوں کی قیمتوں میں اضافہ کا امکان ہے۔ 75 ارب روپے کا انکم ٹیکس ریلیف ختم کرنے کی تجویز بھی زیر غور ہے۔

ذرائع کے مطابق  200ارب روپے تک کے نئے ٹیکس لگانے پر غور کیا جائیگا ۔  5 ہزار 200 اشیاء پر اضافی ڈیوٹی 300 فیصد تک کرنے اور بجلی سبسڈی پر بھی نظر ثانی کیے جانے کا امکان ہے۔

سبسڈی ختم ہونے سے بجلی کے نرخوں میں اضافہ ہوگا۔ موبائل فونز کی درآمد پر 10 فیصد ریگولیٹری ڈیوٹی عائد کرنے پر غور اورمنقولہ جائیداد پر ویلتھ ٹیکس عائد کرنے کی تجویز دی جائیگی۔

تین  سالہ پرانی گاڑیوں کی جگہ 2 سالہ پرانی گاڑیوں کی درآمد پر اجازت ہوگی5 سال کی بجائے 2 سال پرانی جیب درآمد کرنے کی بھی تجویز دی گئی ہے۔ بجٹ ترامیم منظوری کےلیئے پارلیمنٹ میں پیش کی جائیں گی۔

loading...
loading...