پروٹیز کیخلاف گرین شرٹس پہلا ون ڈے کیوں جیتیں گے؟

Image result for pakistan vs south africa 2018

فائل فوٹو

گزشتہ دو سے ڈھائی ماہ پاکستانی کرکٹ ٹیم کیلئے یقیناً بے حد مشکل رہے مگر اب ذرا ریڈ چیری اور وائٹ کِٹ کے جمود سے نکل کر مختصر دورانیے کیکرکٹ کی بات کرلیتے ہیں، گرین شرٹس اور پروٹیز کے درمیان ہفتے سے 5 میچوں پر مشتمل ون ڈے سیریز کا آغاز ہونے جارہا ہے تو ہم نے سوچا کیوں نہ اعداد و شمار اور دونوں ٹیموں کے اثاثوں کا ذکر کرلیا جائے۔

سب سے پہلے دونوں ٹیموں کے اسکواڈ کی بات کرلیتے ہیں، جہاں پاکستانی ٹیم میں شعیب ملک اور محمد حفیظ جیسے تجربہ کار کھلاڑیوں کی موجودگی سے ٹیم کا توازن بہتر ہوگا وہیں جنوبی افریقہ نے پہلے 2 میچوں کیلئے اپنے اہم گیند باز ڈیل اسٹین اور وکٹ کیپر بلے باز ڈی کوک کو آرام دے دیا ہے، تاہم اس کا مطلب یہ ہرگز نہیں کہ پروٹیز کمزور پڑجائیں گے کیونکہ انہوں نے ٹیسٹ سیریز کے کامیاب ترین بولر جُوان اولیویئر کو ٹیم میں شامل کرلیا ہے جبکہ ہینرِچ کلاسین کیپنگ گلوز سنبھالیں گے۔

پاکستانی 16 رکنی اسکواڈ میں کپتان سرفراز احمد، فخر زمان، شان مسعود، امام الحق، بابر اعظم، شعیب ملک، محمد حفیظ، محمد رضوان، حسین طلعت، فہیماشرف، شاداب خان، عماد وسیم، حسن علی، محمد عامر، شاہین شاہ آفریدی اور عثمان شنواری شامل ہیں۔

یہ بھی پڑھیئے:آخر یہ ہو کیا رہا ہے سے یہ کیا ہوگیا۔۔

جبکہ اگر جنوبی افریقی اسکواڈ پر نظر ڈالی جائے تو ان کی ٹیم میں کپتان فاف ڈوپلیسس، ہاشم آملہ، کوئنٹن ڈی کوک، ریزے ہینڈرکس، عمران طاہر، ہینرچ کلاسین، ڈیوڈ ملر، ڈین پیٹرسن، فیہلوکوویو، پروٹوریئس، کاگیسو رباڈا، تبریز شمسی، ڈیل اسٹین، جُوان اولیویئر اور وین ڈر ڈوسین شامل ہیں۔

اس بات میں تو کوئی شک نہیں کہ پاکستانی ٹیم ٹیسٹ فارمیٹ کی نسبت مختصر دورانیے کی کرکٹ میں خاصی بہتر ہے اور یقیناً وہ پروٹیز کو ٹف ٹائم دینے کی بھرپور صلاحیت رکھتی ہے، یا یوں بھی کہا جاسکتا ہے کہ اگر ‘آن پیپر’ دونوں ٹیموں کا موازنہ کیا جائے تو پاکستانی ٹیم زیادہ بہتر نظر آرہی ہے۔

اگر ان دونوں ٹیموں کے درمیان کھیلے گئے گزشتہ 5 ایک روزہ میچوں کا موازنہ کیا جائے گرین شرٹس خاصے آگے دکھائی دیتے ہیں۔ پاکستان نے جنوبی افریقہ کے خلاف پچھلے 5 میں سے 4 میچ جیتے ہوئے ہیں جبکہ پروٹیز صرف ایک میچ میں ہی فتح اپنے نام کرسکے ہیں۔

اس سیریز کا پہلا میچ پورٹ ایلزبتھ کے میدان پر کھیلا جائے گا اور یہ بات جان کر آپ کو یقیناً حیرانی ہوگی کہ شاہین اب تک اس میدان پر ناقابل شکست ہیں۔ گرین شرٹس اس میدان پر کل 4 میچز کھیل چکے ہیں جن میں سے 3 میں فتح حاصل کی جبکہ ایک میچ بے نتیجہ رہا۔ اس کے علاوہ اس میدان کا سب سے بڑا اسکور کرنے کا اعزاز بھی گرین شرٹس کے پاس ہے، پاکستان نے 2002 میں6 وکٹوں کے نقصان پر 335 رنز اسکور کئے تھے اور 182 رنز کےبھاری مارجن سے فتح اپنے نام کی تھی۔

یہ بھی پڑھیئے: میچ فکسنگ کے باعث اپنا کیریئر برباد کرنے والے 10 کرکٹرز

دونوں ٹیموں کے درمیان کھیلی گئی آخری سیریز بھی پاکستان کے نام رہی تھی، شاہینوں نے مصباح الحق کی کپتانی میں 3 میچوں کی سیریز 1-2 سے اپنےنام کرکے پروٹیز کو انہی کے ملک میں کراری شکست سے دو چار کیا تھا۔

پاکستانی ٹیم ان دنوں دباؤ میں ضرور ہے مگر پروٹیز کے خلاف حالیہ اعداد و شمار اور اس میدان کی تاریخ کو مدنظر رکھا جائے تو کوئی حیرانی کی بات نہہوگی کہ گرین شرٹس پروٹیز کو شکست دے دیں۔

نوٹ: یہ مضمون مصنف کی ذاتی رائے ہے،  ادارے کا اس تحریر سے متفق ہونا ضروری نہیں۔     

loading...
loading...